Tag Archives: talash

The both of us

آج بازار برہم کریں؟ ہم بھی تم بھی

نیلامیِ  قلم  کریں؟ ہم  بھی  تم بھی

Should we rouse

A passion somewhere?

Should we both

Put up our pens for bidding?

 

خود پے ظلم کریں ہم بھی تم بھی

جاں پہ ستم  کریں ہم بھی تم بھی

Both of us

Torture ourselves

Hurt ourselves

The both of us

 

تم جاؤ خداخانہ، ہم باسیِ میخانہ

جستجوِ علم کریں ہم بھی تم بھی

You go to the temple

I towards the tavern

We both seek

Knowledge

 

تلاش ہے کسی کی، نظرِ بےطرح کی

خواہشِ  الم  کریں   ہم  بھی  تم  بھی

We seek a vision

Like no other

A sorrow

Sought by us both

 

دعا کرتے ہیں علاجِ عشق کے لیے

دم  پے دم  کریں  ہم  بھی  تم  بھی

And we pray

For a cure

For love

A prayer repeated often

 

پتھروں میں رب نہیں تو پھر کیوں

خدا  صنم  کریں  ہم  بھی  تم بھی

And if there is no spirit

In stones

Why do we become so connected

To those rocks?

 

جو بھر گئے ہیں تیرے دل کے گھاؤ

نیا  زخم  کریں؟  ہم  بھی  تم  بھی

If your earlier wounds

Have healed

Should you and I

Make new ones?

 

یہ کیا ستم کیا؟ کیوں درد عیاں کیا

تلاشِ غم کریں؟ ہم  بھی  تم  بھی

Oh come now!

Why did you tell me

About your sorrow

Now find a new misery

 

استاد  اور کیا؟   کہنا  باقی  رہا

گفتگو ختم کریں؟ ہم بھی تم بھی

So What is left?

Yet unsaid?

Should we stop talking

The both of us?

 

Advertisements

Leave a comment

Filed under Ghazal

What is and is not

ہے  کوئی  امامِ   برحق  موجود؟

ہو چکی بیزاریِ حاضر و موجود

Can you find me

A true leader

I am sick of

What is present and correct

 

کیا بتاؤں کس کی تلاش کرتا ہوں

وہی مطلوب ہے جو ہے مسجود

And how do I explain

What I seek

I desire

Her that I worship

 

مجھے ہی دیکھتا ہے میرا عکس

عکس ثابت نہیں کرتا میرا وجود

The image in the mirror

Stares back at me

Does it ever

Prove my existence?

 

مقصود  ایک،    پر   راہیں   جدا  جدا

جذبِ مستی صوفی، ملا صرفِ سجود

We have the same objective

We take different paths to it

A mystic in ecstasy

The scholar in prayer

 

یہ ہے تو وہ نہیں،  یقین  لا یقین

ہیں بس یہیں تک علم کی حدود

If this is, then that is not

Belief

Disbelief

Why is knowledge restricted to that debate?

 

اپنی فکر کریں، فکرِ جہاں جانے دیں

آپ  کی  جاں   ہے,   تو  جہاں  بود

And you should worry

For yourself, not the world

The world only exists

As long as you do

 

وردِ  استاد  تو  بس  اتنا ہی  ہے

نبی بود علی بود نبی بود علی بود

His mantra is limited

To repeating

May the Prophet live may Ali live

May the Prophet live may Ali live

Leave a comment

Filed under Ghazal