Tag Archives: shama

In Hope…

دیر سے سہی،  پیام  آنے  کی  امید  تو  ہے

جھوٹی سہی، دل کو قیام آنے کی امید تو ہے

 

ہر حسین کے ہاتھ میں اک شمع روشن ہے

آج  دلِ  خستہ  کو جلانے  کی  امید تو ہے

 

سنا  کے  اس  کی  باتیں  بہت  نشیلی  سریلی

اس سر شناس سے سر ملانے کی امید تو ہے

 

سنا کے آپ نظر سے تقدیر بدلتے ہیں

ہمیں بھی یہ انعام پانے کی امید تو ہے

 

مانا زیست کچھ نہیں ماسوا جبرِ مسلسل

چلو پھر زیست سے جانے کی امید تو ہے

 

ہرچند  استاد میری بات سن  مسکرا اٹھا

اس سنگدل صنم کو رلانے کی امید تو ہے

 

It might be some time

But I hope to hear from her

It may be a false hope

But it is a hope

 

I see beautiful faces all around me

And every man carries a flame

I hope someone

Will set fire to my heart today

 

And I’ve heard her words

Intoxicating and Harmonious

I hope to breath

In harmony with her

 

I have been told

You can change fates with just a look

I too hope for

The same reward

 

Fine, I admit it

Life is nothing but suffering

I hope that one day

This suffering will end

 

And even though he laughed

When he heard my words

One day I hope

To move him to tears

 

Leave a comment

Filed under Ghazal, Poetry

Remembrance

جو کوئی بات دکھاتی ہے، وہی یاد آتی ہے

سرد  رات  ستاتی  ہے،  وہی یاد آتی ہے

When something hurts me

I am reminded of her

Winter nights

Remind me of her

 

بارہا چاند  میں  بھی  نظر  آتی  ہے

چاندنی لبھاتی ہے، وہی یاد آتی ہے

Oftimes, I see her in the moon

I like the moonlight

Though it does

Remind me of her

 

غور  سے  دیکھی  نہرِ جان  کی روانی

موجِ غم آتی جاتی ہے، وہی یاد آتی ہے

I see the river of time

Waves of joy and sorrow

One after the other

Remind me of her

 

رو رو نکال دوں زندگی سے یاد اسکی

زندگی  رلاتی  ہے،  وہی  یاد  آتی ہے

I would have wept away

Her memory

Sadly the tears

Bring back more memories

 

ایسے ہی کسی موسم میں ہم ملے تھے

یہ  رت  جلاتی  ہے،  وہی یاد آتی ہے

I remember it was similar weather

When we met

I hate this weather now

It reminds me of her

 

کاوش کی بھولنے کی غمِ دنیا لے کے

ایسے یاد جاتی ہے؟  وہی یاد آتی ہے

So I tried to forget her

Looking at the world’s sorrows

It was a fool’s errand

It does not remove memories

 

یہ غزل  ختم  تو  محفل  ختم  استاد

شمع ٹمٹماتی ہے،  وہی یاد آتی ہے

The words end

And so do the night’s revelries

The candle flickers

It reminds me of her

 

7 Comments

Filed under Ghazal, Poetry