Tag Archives: land

The Patient Ones

مانا کے یار کہتے ہیں  ہمیں  جہاں بین

عزیز کوئی جگہ نہیں ماسوا اپنی زمیں

I am known

As the traveller

But there is no place dearer

Than my own land

 

آج تک اسی شش و پنج میں مبتلا ہوں

اُس بدن سے رستا تھا عرق یا انگبیں

To this day

I remain confused

Was it ambrosia

Or honey that intoxicated me

 

کون ہے میخانہ میں آج لائقِ  امامت

کہاں گئے وہ نیک کار  وہ  صالحین

And who in the tavern

Is worthy of leading us

Where are the pious ones

The good people

 

فقیر ہوں  ترابی  تو گدائی میری شاہی

میری  فکر  کیوں کریں  میرے ناصحین

I am a faqir

My poverty is my kingship

Why should the caregivers

Worry about me

 

اورسن باتیں اور سه استاد ان  کی

سنتے  ہیں  کے إِنَّ ٱللَّهَ مَعَ ٱلصَّٰبِرِينَ

Just show

A little more patience

I have heard

God is with the patient ones

 

Leave a comment

Filed under Ghazal, Poetry

Living in the city…

دلِ خطاکار میرا،  گنہگاروں کی  بستی ہے

نفسِ گناہگار میرا. خطاکاروں کی بستی ہے

My sinful soul is a city

Populated by sinners dear to me

And my ego

Populated by own misdeeds

 

وہ   ہر   بات   بڑے   تحمل   سے  سنتے  ہیں

الہی بتوں کی بستی تو، نیکاروں کی بستی ہے

The false idols

Listen kindly to whatever I say

Dear God, this pagan temple

Seems to be filled with virtue

 

خلوصِ دل سے خالی کیا، ہم نے خدا کا گھر

مسجد کیا خاک ہے؟ ریاکاروں کی بستی ہے

And with dedication

We destroyed the house of worship

What is it that remains?

A dwelling of hypocrites

 

حالاتِ  شہر اب  انساں  کو  حیواں  کر  دیں

شہر عزیز لاکھ سہی، سزاواروں کی بستی ہے

As much as I love the city

The conditions therein

Turn men into animals

It’s often a punishment to live there

 

ہم  دل   کو   بیچتے  رہے   خریدار  نہ  ملا

چلو پھر چلیں جدھر، خریداروں کی بستی ہے

And though I kept my heart for sale

I could not find the right buyer

Let us go then

To the city of the buyer

 

کچھ  ایسا  طلسم  ہے  تیری  نظر  کا  کے

شہرِ دشمناں بھی، نازبرداروں کی بستی ہے

And there is a certain spell

In your vision

Which turns this wasteland

Into something quite bearable

 

کآش نگر ایسا بھی ہو، دیکھ جسے میں کہوں

یہ جگہ استاد کے، غمخاروں کی بستی ہے

I wish to find a land

Gazing upon which I can say

Yes,

It is the land of my friends

Leave a comment

Filed under Ghazal, Poetry